ایم این اے عائشہ گلالائی رضیہ سلطانہ بن گئیں ۔

تحریک انصاف کی باغی رکن عائشہ گلا لائی کی پارلیمینٹ میں دبنگ انٹری نے سب کو حیران کر دیا۔کیونکہ وہ قبائلی روایتی لباس میں تھیں ۔ اس منفرد انداز کو دیکھ کر سب دنگ رہ گئے ۔ اجلاس کے بعداُنہوں نے کہا کہ رضیہ سلطانہ بھی ایک خاتوں تھیں جنہوں نے مردوں کے معاشرے میں مردوں کا مقابلہ کیا۔انہوں نے کہا کہ وزیر قبائل پینتھر کی طرح ہوتے ہیں اور اپنا شکار اکیلے کرتے ہیں ۔
معزز قارئین
یہ دراصل عائشہ گلالائی نے تحریک انصا ف کو پیغام دیا ہے ۔کہ وہ ان کا اکیلے مقابلہ کرے گی ۔ اور ڈرے گی نہیں ۔یعنی وہ عورتوں کااستحصال کرنے والی مافیا کا مقابلہ کرے گی ۔
اس کے علاوہ انہوں نے کہاکہ پاکستان کی 52 فیصد آبادی خواتین سے کہنا چاہتی ہوں ۔کہ مردوں کے اس معاشرے میں مردوں کا مقابلہ کریں ۔انہوں نے کہا کہ عمران خاں کے بچے باہر تعلیم حاصل کر رہے ہیں ۔اور وہ یہاں عام لوگوں کے بچوں کو جلسوں میں بدتہذیبی سکھا رہا ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں