توحید کے بغیر جنت نہیں مل سکتی

علم پڑھیا ں اشرف نہ ہون جہڑے ہون اصل کمینے
پیتل کدی نئیں سونا ہوندا بھاویں جُڑئیے لعل نگینے
شوم تھیں کدی نئیں صدقہ ہوندا پاویں ہون لکھ خزینے
بھلیابھاج توحید نئیں جنت ملدی بھاویں مریے وچ مدینے
معزز قارئین
بابا بھلے شاہ کہتا ہے ۔ کہ علم کی کتابیں پڑھنے سے کمینے لوگ شریف نہیں بن سکتے جسطرح پیتل میں ہیرے جواہرات جڑنے سے وہ سونا نہیں بن سکتا
جس طرح کنجوس سے صدقے کی امیدنہیں کی جاسکتی ۔چاہے وہ لاکھوں کا مالک ہی کیوں ہو۔اسی طرح جس انسان کے اندر توحید کا علم نہیں ۔اگر وہ مدینہ شہر میں ہی کیوں نہ مرے ۔اُسے کبھی جنت نہیں مل سکتی

اپنا تبصرہ بھیجیں