خواتین کو تیز دھار آلے سے زخمی کرنے والا گرفتار

پولیس نےدعویٰ کیا ہے .کہ کراچی میں خواتین کو تیز دھار آلے سے نشانہ بنانے والے مبینہ ملزم وسیم کو گوجرانوالہ سے گرفتار کرلیا گیا ہے۔

ڈی آئی جی ایسٹ سلطان خواجہ کے مطابق خواتین پر حملوں میں ملوث ملزم کے دوست کی نشاندہی پر پنجاب اور کراچی پولیس نے گوجرانوالہ میں مشترکہ کارروائی کی جس کے دوران وسیم نامی مبینہ ملزم کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وسیم پر شبہ ہے کہ گلستان جوہر اور اطراف میں خواتین پر حملوں میں ملوث ہے۔

انہوں نے بتایا کہ وسیم کو کاغذی کارروائی کے بعد کراچی منتقل کیا جارہا ہےجبکہ ملزم کے کراچی کی وارداتوں میں ملوث ہونے کا معاملہ تحقیقات کے بعد ثابت ہوگا۔

ابتدائی اطلاعات کے مطابق ملزم وسیم کراچی میں خواتین کو تیز دھار آلے سے زخمی کرنے کے بعد فرار ہوجاتا تھا جسے گرفتار کرلیا گیا ہے اور اسے مزید تفتیش کے لئے کراچی منتقل کیا

ذرائع کے مطابق مبینہ مرکزی ملزم وسیم کے قریبی دوست شہزاد کو پولیس نے 4 روز قبل ملیر سے حراست میں لیا تھا۔

چھری یا تیز دھار آلے سے خواتین کو نشانہ بنانے والا ملزم کراچی کے علاقے گلستان جوہر اور گلشن میں کارروائیاں کرتا تھا، اور اب تک 13 خواتین کوزخمی کرچکا ہے۔

ہیلمٹ پہن کر موٹرسائیکل سوار ملزم خواتین کو عقب سے نشانہ بناتا اور زخمی کرنے کے بعد فرار ہوجاتا تھا۔

اس سے قبل پولیس نے شبہ ظاہر کیا تھا کہ خواتین کو نشانہ بنانے والا ملزم نفسیاتی ہے جب کہ سندھ حکومت نے ملزم کی گرفتاری میں مدد دینے والے شخص کے لئے 5 لاکھ روپے انعام کا بھی اعلان کیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں