ملزم مفتی عبدالقوی کا 4 روز ہ جسمانی ریمانڈ

مفتی عبدالقوی کے بارے میں تازہ ترین خبر سامنے آئی ہے.کہ ماڈل قندیل بلوچ قتل کیس میں نامزد ملزم مفتی عبدالقوی کو 4 روز کے جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا گیا۔

ملتان کی مقامی عدالت نے گزشتہ روز مفتی عبدالقوی کی ضمانت کی درخواست خارج کی تھی جس پر مفتی عبدالقوی عدالت سے فرار ہوگئے تھے تاہم ان کی گرفتاری کے عدالتی حکم کےبعد پولیس نے انہیں جھنگ جاتے ہوئے ہائی وے سے گرفتار کیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ برس جولائی میں قندیل بلوچ کو مبینہ طور پر ان کے بھائی وسیم نے غیرت کے نام پر قتل کیا تھا جب کہ مقدمے میں مقتولہ کا کزن حق نواز بھی شامل تھا اور یہ دونوں ملزمان اس وقت ملتان جیل میں ہیں۔

مفتی عبدالقوی، قندیل بلوچ کے ہمراہ اس وقت منظرعام پر آئے جب گزشتہ سال رمضان المبارک کے دوران ماڈل نے چند سیلفیز اور ویڈیو سوشل میڈیا پر شیئر کی جس پر مختلف حلقوں کی جانب سے انہیں شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔
یاد رہے کہ مفتی قوی نے قند یل بلوچ کو رمضان میں نہ صرف کھانے کی دعوت دی .بلکہ اپنی ٹوپی قندیل کو خوشی خوشی دی .اور اس طرح لوگوں کو اپنااصلی چہرہ دکھایا. کہ مفتی صاحبان کچھ بھی کر سکتے ہیں. صرف چانس ملنے کی دیر ہے .مفتی صاحبان تو حسینائوں کی خدمت کے لیے ہر وقت تیار بیٹھے ہیں .
میڈیا زرائع سے پتہ چلا ہے . کہ ریمانڈ کے دوران مفتی قوی کو دل کا دورہ پڑا ہے .یہی ایک طریقہ ہے کہ قندیل بلوچ تک پہنچنے کا.

اپنا تبصرہ بھیجیں