ًًمحرم کے جلوس بند ہونا چا ہیے یا روزگار زندگی

معزز قارئین
سوچنے کی بات ہے کہ محرم میں جلوس بند ہونے چاہیے یابازار بند ہونا چاہیے
کیا قرآن پاک جو اللہ تعالیٰ کا آخری پیغام ہے اس میں آپ کو حج کے علاوہ کہیں ایسے جلوس کا زکر کہیں پاتے ہیں۔آج میں صرف کراچیاور لاہور کے حوالے سے بات کرنے کے موڈ میں ہوں۔کہ کس طرح آٹھ محرم سے کراچی اور لاہورکو تین دن کے لیے بند کیا جائے گا۔حکومت کا پیسہ جو لوگوں کی فلاح وبہبود پر خرچ ہونا چاہیے تھا۔سارا پیسہ ان جلوس والوں کی حفاظت پر خرچ ہوگا۔سوال یہ ہے کہ کیا یہ اسلام ہے کیا یہ ہمارا دین ہے ۔کیونکہ ہمارے دین اسلام کے مطابق اللہ تعالیٰ نے تو فرقے بنانے سے منع کر رکھا ہے ۔تو کیا ایسے لوگ جو اللہ تعالیٰ کے نافرمان بن یعنی فرقہ بنا کر سڑکوں پر پھیل جائیں گے اور لوگوں کے روزی روزگار بند کر دیں گے ۔تو یہ اللہ تعالیٰ کے نافرمان کون سا دین ساری دنیا کے سامنے پیش کریں گے تشدد کادین
کیا قرآن پاک میں ایک بھی آیت ایسی ہے کہ خود پر تشدد کرکے خود کوذخمی کیا جائے ۔اور اس کا نام ثواب ہو گا۔ہم لوگ کب سمجھیں گے۔کب قرآن پاک یعنی اللہ تعالیٰ کی رسی کو مظبوطی سے پکڑیں گے ۔اور اپنے اختلاف ختم کر کے ایک اُمت بنیں گے ۔اللہ تعالیٰ ہم سب کو قرآن پاک کھولنے اور اس پر عمل کرنے کی توفیق عطا فرمائے ۔آمین
قیامت والے دن ہم سے یہ نہیں پوچھا جائے گا ۔کہ ہمارا شمار تشدد کرنے والوں میں تھایا نہیں تھا۔بلکہ
قیامتوالے دن ہم سے قرآن پا ک کے بارے میں یہ پوچھا جائے گا کہ کے اہم نے اپنے علم سے قرآن پاک کااحاطہ کیا تھا یا نہیں کیا تھا۔
اور جن لوگوں نے اپنے علم سے قرآن پاک کا احاطہ نہیں کیا ہوگا۔اُن پر عذاب کا وعدہ پورا ہو جائیگا۔
اس آیت سے ہمیں یہ بھی پتہ چلے گا۔کہ قرآن پاک فرقہ پرستوں یعنی اللہ تعالیٰ کے نافرمانوں سے سیکھنے والی کتاب نہیں ہے بلکہ اپنے علم کوبروئے کار لانے کا حکم ہے ۔
یہ اقتباس www.whatisquranpak.com سے پیش کیا جارہا ہے ۔
) سورہ نمل۔آیات 82تا85۔پارہ 19
اور جب ان پر وعدہ پورا ہو جائے گا۔تو ہم ان کے لئے زمین سے ایک جانور نکالیں گے جو ان سے باتیں کرے گا۔ کہ لوگ ہماری آیات پر یقین نہیں کرتے تھے اور جس دن میں ہم ہر امت سے ایسے لوگوں کی ایک فوج اکٹھی کریں گے جو ہماری آیات کو جھٹلاتی تھی پھر ان کی گروہ بندی کی جائے گی۔ یہاں تک کہ جب وہ آجائیں گے تو اﷲ تعالیٰ ان سے کہے گا کہ تم نے میری آیا ت کو جھٹلایا حالانکہ علمی لحاظ سے تم نے ان کا احاطہ نہیں کیاتھا پھر تم کیا کرتے رہے اور ان کے ظلم کی وجہ سے ان پر عذاب کی بات پوری ہوجائے گی پھر وہ بول بھی نہ سکیں گے ۔
خواتین و حضرات!
آپ نے دیکھا۔کہ ان آیات میں ظلم کرنے والے لوگوں کا ذکر ہے ۔ اللہ تعالیٰ ٖفرماتے ہیں ۔جب بات پوری ہونے کا وقت آجائے گا یعنی جب قیامت آجا ئیگی ۔ تو اللہ تعالیٰ لوگوں کے لیے زمین سے ایک جانور نکالیں گے جو ظالموں سے باتیں کرے گا کہ تم اللہ تعالیٰ کی آیات پر یقین نہیں رکھتے تھے اور جس دن ہم ہر امت سے ایسے لوگوں کی ایک فوج اکٹھی کریں گے جو ہماری آیات کو جھٹلاتی تھی پھر ان گروہ بندی کی جائے گی یہاں تک کہ جب وہ سب آجائیں گے تو اﷲ تعالیٰ ان سے پوچھے گا کہ تم لوگوں نے میر ی آیات کو جھٹلایا حالانکہ علمی لحاظ سے تم نے ان کا احاطہ نہیں کیا تھا پھرتم کیا کرتے رہے اور ان کے ظلم کی وجہ سے ان پر عذاب کی بات پوری ہوجائیگی اور وہ بول بھی نہ سکیں گے ۔
خواتین و حضرات!
آپ نے دیکھا کہ قرآن پاک کو کسی خاص طریقے سے سیکھنے کی اجازت نہیں ہے بلکہ قرآن پاک میں غووٖٖفکر کرنے کا حکم ہے ،اور اپنے علم سے اللہ تعالیٰ کی آیات کو سمجھنے کی ضرورت ہے ۔اگر ہم نے اپنے علم کو استعمال نہ کیا تو ہم پر اللہ تعالیٰ کا وعدہ پورا ہو جائے گا،
معزز قارئین
کسی کے پاس قرآن پاک کے لیے وقت نہیں مگر پورے تین دن ان جلوسوں کے کارواں دیکھیں کہ ان کے لے حکومت نے مجبوراً کیا کیا پلاننگ کی ہے ۔زرا ملاحظہ فرمائیں ۔
ملک بھر میں آٹھویں محرم الحرام کے سلسلے میں برآمد ہونے والے جلوسوں کی سیکیورٹی کے لئے انتہائی سخت اقدامات کئے گئے ہیں جب کہ کئی شہروں میں موبائل فون سروس بھی بند ہے۔

کراچی میں 8ویں محرم الحرام کا مرکزی جلوس نشتر پارک سے برآمد ہو کر حسینیہ ایرانیاں پرختم ہوگا جب کہ نشتر پارک اور جلوس کی گزرگاہوں کو 9 سیکٹر اور 23 سب سیکٹر میں تقسیم کیا گیا۔

ایم اے جناح روڈ اور صدر میں جلوس کی گزر گاہوں سے ملحقہ سڑکوں کو کنٹینر رکھ کر بند کر دیا گیا اور دس محرم کی رات تک دکانیں اور سڑک بند رہے گی۔

سیکرٹری داخلہ سندھ کا کہنا ہے کہ کراچی سمیت کسی بھی ضلع میں موبائل سروس مکمل بندنہیں کی جائے گی تاہم قانون نافذ کرنے والے اداروں کی نشاندہی پر حساس مقامات پر ہی موبائل سروس بندرہیگی۔

لاہور میں 8 محرم الحرام کا مرکزی جلوس امام بارگاہ دربار حسین موری گیٹ سے برآمد ہوگا جو لوہاری، انار کلی اور مال روڈ سے ہوتا ہوا پام اسٹریٹ انار کلی پہنچے گا۔

لاہور میں سٹی ٹریفک پولیس نے نویں اور دسویں محرم الحرام کے لیے بھی ٹریفک پلان جاری کر دیا ہے۔

پلان کے مطابق شاہدرہ سے آنے والی ٹریفک براستہ آزادی فلائی اوور ریلوے اسٹیشن آ سکے گی۔ سگیاں پل اور ائرپورٹ کی طرف رنگ روڈ کھلی رہے گی۔

فیروز پور روڈ سے آنے والی ٹریفک پی ایم جی چوک سے سگیاں پل جا سکے گی۔ سرکلر روڈ سے ٹریفک موری گیٹ کے راستے نیلا گنبد جائے گی۔

لاء کالج پنجاب یونیورسٹی سے اردو بازار کی طرف ٹریفک بند رہے گی جبکہ مستی گیٹ سے چوک ٹیکسالی تک بھی ٹریفک بند رہے گی۔ لوئرمال پر ضلع کچہری سے داتا دربارتک ملحقہ سڑکوں سے ٹریفک کا داخلہ بند ہوگا

دوسری جانب جلوس کے سلسلے میں جی ٹی روڈ کو بھی بند کردیا گیا ہے جو شام 5 بجے تک بند رہے گی۔ ٹریفک پولیس کے مطابق ایبٹ آباد سے راولپنڈی آنے اور جانے والی ٹریفک لورا چوک سے متبادل راستہ اختیار کرے گی۔
اسی طرح دوسرے تمام شہرون کا بھی یہی حال ہے .

تمام شہروں میں غیر اعلانیہ موبائل فون سروس کی بندش کی وجہ سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے .

اپنا تبصرہ بھیجیں