لوگ چاندکو کیوں د یکھیں

میں تمھیں چاند کہوں یہ ممکن تو ہے مگر ۔
لوگ تمھیں رات بھر دیکھیں یہ مجھے گوارہ نہیں ۔
تشریح
اس شعر میں شاعر اپنے دل میں چھپے خیال کے حد شات کے بارے میں کہتا ہے ۔ کہ اُسے محبوبہ کو چاند کہنے پر کوئی اعتراض نہیں۔مگر اسے رویت ہلا ل کمیٹی والوں سے ڈرلگتا ہے ۔کہ کہیں وہ نہ پہنچ جائیں۔ کہ کہاں ہے چاند ۔اور یہ شاعر کو بلکل گوارہ نہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں