ماں تیری عظمت کو سلام ہے

معزز قارئین.
ماں کے حوالے سے یہ نظم فیس بک پر پڑھی.نظم لکھنے والے کا نام ساتھ درج نہیں تھا.جس نے بھی لکھا ہے .اُس نے سب کو ان کی ماں کی یاد دلا دی ہے .چاہے وہ زندہ ہوٰیا وفات پا چکی ہو.اگر کوئی اس نظم کے خالق کا نام بتا دے تو مہربانی ہوگی.

مجھے چاند کہتی تھی ماں
صدا چومتی رہتی تھی ماں

میں خوش رہوں اس لئے
سارے دکھ سہتی تھی ماں

میں اٹھ نہ جاؤں کہیں اس لئے
رات بھر نہ سوتی تھی ماں

ہوتی تھی سردی بہت مگر
میرے کپڑے ضرور دھوتی تھی ماں

کب سکول سے میں آؤں گا لوٹ کر
میری راہ تکتی رہتی تھی ماں

اے ماں ہر اولاد کا تجھ کو سلام
تیری ہمت کو تیری عظمت کو سلام

اپنا تبصرہ بھیجیں